34

علیم خان گروپ کا وزارت اعلیٰ کے لیے پرویز الہیٰ کو ووٹ دینے سے انکار

لاہور : علیم خان گروپ نے وزارت اعلیٰ کے لیے پرویز الہیٰ کو ووٹ دینے سے انکار کر دیا۔اپوزیشن کی غیر مشروط حمایت کا اعلان کیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ترجمان میاں خالد محمود کے مطابق گروپ نے وزارت اعلیٰ کے لیے پرویز الہیٰ کو ووٹ دینے سے انکار کر دیا۔انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان جن القابات سے پرویز الہیٰ کو بلاتے تھے وہ دہرانے کی جسارت نہیں۔
پہلے 4 سال بے ایمان اور نکمے بزدار کو مسلط رکھا اب پرویز الہیٰ کو نامزد کر دیا۔پی ٹی آئی کا ساتھ دینے والے 184 ارکان میں ایک بھی وزیراعلیٰ بننے کا اہل نہیں۔پی ٹی آئی کے ہر مخلص کارکن کو پرویز الہیٰ کی نامزدگی پر اعتراض ہے۔دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ( ق) کے رہنما پرویز الٰہی نے پنجاب اسمبلی کی اسپیکر شپ سے مستعفی نہ ہونے کا فیصلہ کرلیا۔

ذرائع کے مطابق اسپیکر پرویز الٰہی تیزی سے بدلتی سیاسی صورتحال کے پیش نظر استعفیٰ نہیں دیں گے،وہ اسپیکر پنجاب اسمبلی کے عہدے پر رہتے ہوئے ہی وزیراعلیٰ کا ووٹ لیں گے، اعتماد کا ووٹ مل جانے کی صورت میں اسپیکر کے عہدے سے مستعفی ہونگے۔ ذرائع کے مطابق ایوان سے اعتماد کا ووٹ نہ لے سکے تو بطور اسپیکر کام جاری رکھیں گے، آئین کے تحت اسپیکر کا عہدہ رکھتے ہوئے اعتماد کا ووٹ لیا جاسکتا ہے، تاہم وزیر اعلیٰ منتخب ہونے پر آئین کی رو سے انہیں اسپیکر شپ چھوڑنا ہوگی۔
پرویز الٰہی کی نامزدگی کے بعد حکمران جماعت اسپیکر کا امیدوار تلاش کر رہی ہے اور حکومتی حلقوں میں یہ چرچا تھا کہ پرویز الٰہی اسپیکر کا عہدہ چھوڑ دیں گے تاہم ایم کیو ایم کے اپوزیشن کے ساتھ دینے کی خبریں ہیں، پرویز الٰہی نے انہی خبروں کے بعد اسپیکر شپ سے مستعفی نہ ہونے کا فیصلہ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں